فائل فوٹو 

شمال مشرقی بحیرۂ عرب کے اوپر دباؤ کا علاقہ شدت اختیار کر کے ایک ڈپریشن (شدید کم پریشر ایریا) میں تبدیل ہو گیا ہے۔

محکمۂ موسمیات کے مطابق، اس ڈپریشن کی زیادہ سے زیادہ رفتار 50-55 کلومیٹر فی گھنٹہ ہے۔

ڈپریشن کراچی سے تقریباً 260 کلومیٹر جنوب، جنوب مشرق اور ٹھٹھہ سے 280 کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔

اس موسمی نظام کے پہلے شمال مغربی سمت میں اور پھر مغرب کی طرف بڑھنے کا امکان ہے۔

بحیرۂ عرب میں ٹروپیکل سائیکلون کا خطرہ، الرٹ جاری

محکمۂ موسمیات کے مطابق، پاکستان کے کسی بھی ساحلی علاقے کو فی الحال اس ٹراپیکل سائیکلون سے کوئی خطرہ نہیں ہے۔

کراچی میں پی ایم ڈی ٹراپیکل سائیکلون وارننگ سینٹر، اس سسٹم کی کڑی نگرانی کر رہا ہے، اور اسی کے مطابق مزید اپ ڈیٹس جاری کی جائیں گی۔

محکمۂ موسمیات کا یہ کہنا ہے کہ اگلے 3 دنوں کے دوران سمندری حالات انتہائی خراب رہیں گے۔

اس لیے سندھ کے ماہی گیروں کو آج سے 14 اگست تک کھلے سمندر میں نہ جانے اور بلوچستان کے ماہی گیروں کو اس دوران زیادہ محتاط رہنے کا مشورہ دیا گیا ہے۔

تمام متعلقہ حکّام سے درخواست کی گئی ہے کہ وہ ہوشیار رہیں اور پی ایم ڈی کی ویب سائٹ کے ذریعےصورتِ حال سے باخبر رکھیں۔



Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *