فوٹو: فائل

وفاقی حکومت نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے خلاف ڈکلیئریشن سپریم کورٹ بھجوانے کا فیصلہ کرلیا۔

کابینہ اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا کہ پی ٹی آئی فارن ایڈڈ پارٹی ثابت ہوئی ہے، پی ٹی آئی کے خلاف ڈکلیئریشن تیار کرکے سپریم کورٹ جلد بھجوایا جائے گا۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ  تحریک انصاف غیر ملکی امداد لینے والی جماعت قرار پائی ہے، حکومت نے سپریم کورٹ ڈکلیئریشن بھیجنے کا اصولی فیصلہ کر لیا ہے، تحریک انصاف نے 16 اکاؤنٹ ڈکلیئر نہیں کیے، اکاؤنٹ ملازمین کے نام پر کھولے گئے، ان اکاؤنٹ میں پیسے آتے رہے، بھارتی بزنس خاتون نے بھی اکاؤنٹ میں پیسے بھیجے۔

وزیر اطلاعات نے کہا کہ پی ٹی آئی نے11پٹیشن ہائی کورٹ میں دائر کیں کہ یہ دائرہ کار الیکشن کمیشن کا نہیں، حکومت نے ایف آئی اے کو تحقیقات کی ہدایات جاری کی ہیں، اس جرم میں شامل تمام لوگوں کے خلاف آج سے انکوائری شروع کردی گئی ہے، الیکشن کمیشن کے فیصلے کی روشنی میں کارروائی ہوگی، سیکریٹریٹ کے ملازمین کے اکاؤنٹ کو استعمال کیا گیا، ملک میں آنے والے فنڈز کہاں کہاں لگے، مکمل تحقیقات ہوگی۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران خان کے دور میں یہ فیصلہ آتا تو بغیر کارروائی سارے لوگ جیل میں ہوتے۔

انہوں نے کہا کہ پولیٹیکل پارٹی آرڈر 2002 کے تحت وفاقی کابینہ کو تفصیلی بریفنگ دی گئی، تحریک انصاف فارن ایڈڈ پارٹی ڈکلیئر ہوئی ہے، عمران خان کو یہ سب معلوم تھا، 5 سال بیان حلفی جمع کروایا گیا۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ اس وقت سیاسی حریف کا معاملہ نہیں ہے قانون کا معاملہ ہے، دوسرا اہم معاملہ جعلی بیان حلفی کا ہے۔

وزیر اطلاعات نے کہا کہ اوورسیز خیراتی پیسے دیں اور آپ پیسے استعمال کریں سیاسی مقاصد کے لیے۔



Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *