سابق وزیر خزانہ اور پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما شوکت ترین کی خیبرپختونخوا کے وزیر خزانہ تیمور جھگڑا سے گفتگو کی آڈیو بھی سامنے آگئی۔

شوکت ترین نے تیمور جھگڑا سے سوال کیا کہ آپ نے خط بنا لیا؟

تیمور جھگڑا نے جواب دیا کہ ابھی بناتا ہوں میرے پاس پرانا خط ہے، راستے میں ہوں ابھی بنا کر آپ کو بھیجتا ہوں۔

شوکت ترین کا کہنا ہے کہ خط میں سب سے بڑا اور پہلا پوائنٹ ہوگا جو سیلاب آیا اس نے خیبرپختونخوا کا بیڑا غرق کردیا ہے، پہلا پوائنٹ ہو کہ ہمیں سیلاب متاثرہ علاقوں میں بحالی کے لیے بہت پیسہ چاہیے، میں نے محسن لغاری کو بھی کہہ دیا ہے۔

تیمور جھگڑا نے کہا کہ ویسے یہ بلیک میلنگ کا حربہ ہے پیسے تو کسی نے ویسے ہی نہیں چھوڑنے، میں نے تو پیسے نہیں چھوڑنے، پتا نہیں لغاری کو چھوڑنے ہیں یا نہیں۔

شوکت ترین کا کہنا ہے کہ آج یہ خط لکھ کر اور جو آئی ایم ایف والی ہے اس کو کاپی بھیج دیں گے، تاکہ پتا تو چلے ان کو کہ یہ ہمارے سے پیسے رکھوا رہے تھے ہم وہ پیسے لے لیں گے۔

تیمور جھگڑا نے جواب دیا کہ ٹھیک ہے، میں وہ بنا کر اور میں آئی ایم ایف کےنمبرٹو کو جانتا ہوں ،میں آئی ایم ایف کا جو نمبر ٹو یہاں پر ہے اس سے تو میں ویسے ہی ساری معلومات لیتا رہا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ مجھے محسن نے بھی فون کیا تھا اس سے بھی میری بات ہوئی ہے، خان صاحب اور محمود خان نے مجھے کہا ہے ہمیں اکٹھے پریس کانفرنس کرنی چاہیے۔

شوکت ترین نے جواب دیا کہ وہ پریس کانفرنس نہیں ہونی وہ یہ تھا کہ یہ ہم کرلیں گے، اس کے بعد ہم پیر کو سیمینار کریں گے، اس پر پریس کانفرنس کرنی ہے تو وہ بھی ہم کرسکتے ہیں۔

کے پی کے وزیر خزانہ تیمور جھگڑا نے شوکت ترین کو جواب دیتے ہوئے کہا کہ چلیں پہلے خط بھیجتے ہیں، ٹھیک ہے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما شوکت ترین اور پنجاب کے وزیر خزانہ محسن لغاری کی ٹیلی فونک گفتگو سامنے آئی تھی۔



Leave a Reply

Your email address will not be published.