فائل فوٹو

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ اسلام آباد نے سوشل میڈیا ایکٹیوسٹ جمیل فاروقی کا 2 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرکے انہیں پولیس کے حوالے کردیا۔

سوشل میڈیا ایکٹیوسٹ جمیل فاروقی کو جوڈیشل مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش کیا گیا جہاں عدالت نے دلائل سننے کے بعد ریمانڈ سے متعلق فیصلہ محفوظ کیا اور سنایا۔

ایک صفحے پر مشتمل تحریری فیصلہ ڈیوٹی مجسٹریٹ میاں اظہر ندیم نے جاری کیا، فیصلے میں کہا گیا کہ جمیل فاروقی کو اسلام آباد پولیس کےخلاف وی لاگ کرنے پر گرفتار کیا گیا،جمیل فاروقی نے اسلام آباد پولیس پر شہباز گِل کو ٹارچرکرنے کا الزام لگایا۔

تحریری فیصلے میں کہا گیا کہ اسلام آباد پولیس کی جانب سے 8 روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی گئی،اسلام آباد پولیس جمیل فاروقی کا موبائل اور دیگر ڈیوائسز برآمد کرنا چاہتی ہے،جبکہ ملزم کے وکیل نے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی مخالفت کی۔

تحریری فیصلےمیں کہا گیا کہ ملزم کے وکیل نے کہا جمیل فاروقی نے اپنے ذرائع سے خبر دی، تفتیش کے لیے موبائل فون اور دیگر ڈیوائسزکی برآمدگی ضروری ہے۔

عدالت نے کہا کہ دو روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کیا جاتا ہے، 25 اگست کو ملزم کو میڈیکل رپورٹ کیساتھ پیش کیا جائے۔

واضح رہے کہ جمیل فاروقی پر اسلام آباد پولیس پر الزامات لگانے کا مقدمہ درج ہے، پولیس نے جمیل فاروقی کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی تھی۔



Leave a Reply

Your email address will not be published.