—فائل فوٹو

سکھر کے نجی اسپتال میں ٹوٹی ٹانگ کے بجائے درست ٹانگ کا آپریشن کرنے والے ڈاکٹر اور دیگر 3 افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا۔

پولیس کے مطابق مقدمہ مریض کے بھانجے کی مدعیت میں درج کیا گیا ہے۔

ایف آئی آر کے مطابق مدعیٔ مقدمہ کا کہنا ہے کہ ڈاکٹر نے ماموں کو دونوں ٹانگوں سے مفلوج بنا دیا۔

مریض کے اہلِ خانہ کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ 70 سال کے رانجھن شیخ کو فرش پر گرنے سے دائیں ٹانگ میں فریکچر ہوا تھا، ڈاکٹر نے غفلت کا مظاہرہ کرتے ہوئے بائیں ٹانگ کا آپریشن کر دیا۔

ورثاء کا کہنا ہے کہ ڈاکٹر نے 60 ہزار روپے لے کر دوسری ٹانگ کو بھی خراب کر دیا۔

واضح رہے کہ ‎سکھر میں ڈاکٹر نے مریض کی دائیں کے بجائے بائیں ٹانگ کا غلط آپریشن کر کے لوہے کی راڈ ڈال دی تھی۔

اس واقعے کے بعد ڈاکٹر نے اہلِ خانہ سے معذرت کرتے ہوئے اسے نارمل غلطی قرار دیا تھا۔

ڈاکٹر شکیل عباسی کا کہنا تھا کہ ‎غلطی میں ایسا ہو جاتا ہے، دوسری ٹانگ کی بھی سرجری کر دی ہے، غلطیاں ہو جاتی ہیں، ایک ماہ میں مریض کو چلا کر میڈیا کو ویڈیو بھیجوں گا۔

ڈاکٹر کا کہنا تھا کہ مانتا ہوں غلطی ہوئی ہے، 20 سال سے سرجری کر رہا ہوں، کبھی ایسا نہیں ہوا۔



Leave a Reply

Your email address will not be published.