صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا کہنا ہے کہ میں صدر نہیں بننا چاہتا تھا، کہا گیا تھا اسپیکر بنائیں گے۔ کسی وجہ سے خان صاحب نے کہا آپ صدر بن جائیں۔

صدر مملکت عارف علوی نے ایک انٹرویو میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نواز شریف سے ان کی وزارتِ عظمیٰ کے دور میں عمران خان کے ہمراہ ملاقات ہوئی، اس وقت نواز شریف کا کہنا تھا کہ سینیٹ الیکشن میں بےانتہا پیسا چلتا ہے، جسے مل کر روکنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کچھ لوگ کہتے ہیں واضح مینڈیٹ آنا چاہیے جو معیشت کے لیے اچھا ہے، سب سے اپیل ہے کہ ملک کا ماحول ایسا ہو کہ معاملہ حل کی طرف جائے۔

عارف علوی نے کہا کہ ایوان صدر میں پریشان کن وقت گزر رہا ہے۔ ملک میں سیلاب، سیاسی و معاشی بحران ہو تو ذہنی پریشانی بڑھ جاتی ہے۔

صدر مملکت کا کہنا تھا کہ حکومت کی تبدیلی پر چیف جسٹس سپریم کورٹ کو لکھے گئے خط کا جواب نہیں آیا۔ چیف جسٹس کو خط میں لیاقت علی خان کی شہادت کا ذکر کیا کہ آج تک تحقیقات کا پتہ نہیں چلا۔ 

صدر نے کہا کہ بیگم رعنا لیاقت علی خان نے میرے والد کو سمری دی تھی جس میں تحقیقات تھیں۔



Leave a Reply

Your email address will not be published.