فیصل آباد میں لڑکی کو ہراساں، انسانیت سوز تذلیل اور تشدد کا مقدمہ درج کرلیا گیا۔

متاثرہ لڑکی کے ساتھ واقعے کی ویڈیو وائرل ہونے پر 16 افراد کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا۔

متاثرہ لڑکی نے پولیس کو بیان دیا کہ ملزم اُس کی دوست کا والد ہے، جو اُس سے شادی کرنا چاہتا تھا۔

لڑکی نے بتایا کہ ملزم نے مجھے شادی سے انکار پر تشدد کا نشانہ بنایا، وہ اپنے 16 ساتھیوں کے ساتھ گھر میں داخل ہوا اور تشدد کیا۔

متاثرہ لڑکی نے مزید کہا کہ ملزمان مجھے اور میری بھابھی کو اپنے گھر لے گئے اور وہاں تشدد کیا، میرے سر کے بال اور بھوئیں کاٹ دیں اور مجھے جوتے چاٹنے پر مجبور کیا۔

ایف آئی آر میں درج کیا گیا کہ ملزم نے جنسی طور پر ہراساں کیا اور ویڈیو بھی بنائیں، تمام واقعے کی ویڈیو بنانے کے بعد مجھے دھمکیاں دے کر چھوڑا۔

لڑکی نے پولیس کو بتایا کہ ملزمان نے تشدد کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل کردیں۔

پولیس نے لڑکی کی دوست سمیت 16 افراد کے خلاف مقدمہ درج کیا جبکہ 6 ملزمان کو گرفتار بھی کرلیا ہے۔



Leave a Reply

Your email address will not be published.