فوٹو: جنگ

کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ (کے ڈبلیو ایس بی) کے چیف آپریٹنگ آفیسر (سی او او) اسد اللّٰہ خان نے کہا ہے کہ حب ڈیم سے کراچی کو پینے کا پانی سپلائی کرنے والی حب کینال کی ورلڈ بینک کے تحت اپ گریڈیشن کے سلسلے میں کینال کا تفصیلی معائنہ اور جائزہ لیا گیا، جس کے لیے غیر ملکی ماہرین کی ٹیم نے حب کینال کا دورہ کیا۔

ترجمان واٹر بورڈ کے وضاحتی بیان مطابق پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت قومی اور بین الاقوامی بڈرز حب کینال کا تفصیلی جائزہ لینے آئے تھے اس موقعے پر ورلڈ بینک کے ذیلی ادارے آئی ایف سی نے حب کینال کا تفصیلی معائنہ بھی کیا۔

اسد اللّٰہ خان کے مطابق بین الاقوامی برڈز کو کینال کا مکمل جائزہ لینا تھا تاکہ اس کی بہتری کے لیے فوری اقدامات کیے جائیں کیونکہ مرمتی کام کے سلسلے میں پہلے حب کینال کا مکمل معائنہ اور تفصیلی جائزہ لینا ضروری تھا جس کی وجہ سے حب کینال سے شہر کو پانی کی معطل کی گئی۔

انہوں نے بتایا کہ حب کینال کے ایک چوتھائی ایریا کی اپ گریڈیشن کی جائے گی۔

فوٹو: جنگ
فوٹو: جنگ

دریں اثنا کے ڈبلیو ایس بی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) سید صلاح الدین احمد نے کہا تھا کہ کراچی کو پانی سپلائی کرنے والی حب کینال مرمت کے لیے نہیں بلکہ ورلڈ بینک کے پروجیکٹ کے سروے کے لیے بند کی گئی تھی۔

جیو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا تھا کہ ورلڈ بینک حب کینال کی مکمل مرمت کے لیے بجٹ فراہم کر رہا ہے جس کیلئے حب کینال کو مہینوں بند رکھنا پڑتا مگر ایسا نہیں کر سکتے۔

انہوں نے بتایا تھا کہ پہلے مرحلے میں حب کینال کے ایک چوتھائی حصے کی مکمل مرمت کی جائے گی جس کے لیے گزشتہ دو روز میں سروے مکمل کیا گیا ہے۔

سید صلاح الدین احمد کا کہنا تھا کہ بجٹ جاری ہوتے ہی حب نہر کی مرمت کا کام شروع کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا تھا کہ ترجمان واٹر بورڈ کی مرمت کے لیے نہر بند کرنے کی جاری خبر غلط فہمی تھی جیسے جواز بنا کر مزید غلط فہمی پیدا ہوئی۔

سربراہ واٹر بورڈ کا مزید کہنا تھا کہ حب کینال کی مرمت کے نام پر ایک روپیہ بھی خرچ نہیں ہوا، حب کینال کو مرمت کی ضرورت ہے جس کا ٹینڈر کیا جائے گا۔



Leave a Reply

Your email address will not be published.