فوٹو: فائل

کراچی کے علاقے نارتھ ناظم آباد میں فائیو اسٹار چورنگی کے قریب پولیس مقابلے کی تحقیقات جاری ہیں۔ پولیس مقابلے کے دوران گولی لگنے سے جاں بحق شیرخوار بچی اپنی ماں کے ساتھ نارتھ کراچی سے لیاقت آباد میں اپنی نانی کے گھر جا رہی تھی۔

سینئر سپرنٹنڈنٹ پولیس (ایس ایس پی) معروف عثمان کے مطابق اس افسوس ناک واقعے کی اعلیٰ سطح کی تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں۔

ایس ایس پی سینٹرل کے مطابق 24 سالہ حنا راشد سرجانی ٹاؤن کی رہائشی بتائی گئی ہیں جو چنگچی رکشہ میں گھر سے اپنی قریبی عزیز خاتون کے ہمراہ اپنی والدہ کے گھر لیاقت آباد جارہی تھیں کہ نارتھ ناظم آباد میں شیر شاہ سوری روڈ پر ملزمان اور پولیس اہلکاروں کے مابین فائرنگ کا تبادلہ ہوا۔

اس دوران ایک گولی ماں کی گود میں موجود 9 ماہ کی انابیہ راشد کے جسم کو چھیدتے ہوئے حنا راشد کے بازو میں لگی جبکہ ڈاکٹرز کے مطابق دوسری گولی حنا راشد کے دوسرے بازو میں لگی۔

زخمی حنا راشد کی قریبی عزیز خاتون کے مطابق انہوں نے پولیس اہلکاروں کو فائرنگ کرتے ہوئے دیکھا اور شبہ ظاہر کیا کہ بچی اور ان کی ماں کو پولیس کی گولی لگی۔

پولیس کی ابتدائی تحقیقات کے دوران دونوں خواتین بچی کے ہمراہ رکشہ ڈرائیور کی پچھلی سیٹ پر بیٹھی تھیں اور ان کا رُخ فرار ہونے والے ڈاکو کی طرف تھا جو رکشہ کے آگے تھے اور اپنے تعاقب میں آتے ہوئے پولیس اہلکاروں پر فائرنگ کر رہے تھے۔

اسی بنیاد پر پولیس شبہ ظاہر کر رہی ہے کہ ماں بیٹی کو ملزمان کی فائرنگ سے گولیاں لگیں۔

ایس ایس پی سینٹرل معروف عثمان کے مطابق اس سلسلے میں حتمی طور پر بچی کی لاش کے پوسٹ مارٹم کے بعد کہا جاسکتا ہے۔

ایس ایس پی معروف عثمان کے مطابق زخمی ماں بیٹی کو وہی چنگچی رکشہ ڈرائیور لے کر نارتھ ناظم آباد میں مام جی اسپتال پہنچا اور انہیں ایمرجنسی میں چھوڑ کر چلا گیا، جہاں بچی کی موت واقع ہوئی اور اسے ایدھی ایمبولینس کے ڈرائیورز نے عباسی شہید اسپتال منتقل کیا۔

معروف عثمان کے مطابق رکشہ ڈرائیور کا بیان لینے کے لیے اس کی تلاش جاری ہے جبکہ اسپتال کی سی سی ٹی وی فوٹیج کی مدد سے رکشہ کا نمبر بھی حاصل کیا جا رہا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ جائے وقوعہ گرین لائن بس اسٹیشن کے کیمروں کی رینج میں ہے، جن کی سی سی ٹی وی فوٹیج حاصل کرنے کی کوشش بھی کی جارہی ہے۔

پولیس کے مطابق مزید تفتیش کی جارہی ہے اور جلد ملزمان کو بھی کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔



Leave a Reply

Your email address will not be published.