فائل فوٹو

وزیرِ اعظم شہباز شریف کا کہنا ہے کہ سیلاب سے تباہ حال افراد کو 25 ہزار روپے فی خاندان پہنچائيں گے، بلوچستان کے بعد سندھ میں بھی امدادی رقوم کی تقسیم شروع ہوگئی۔

سندھ میں سجاول کے سیلاب سے متاثرہ علاقوں کا وزیرِ اعظم شہباز شریف نے وزیرِ اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کے ہمراہ دورہ کیا۔

وزیرِ اعلیٰ کی جانب سے وزیرِ اعظم کو امدادی کارروائیوں سے متعلق بریفنگ دی گئی۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیرِ اعظم نے بتایا کہ حکومت نے 38 ارب روپے کی رقم مختص کی ہے، سیلابی ریلے نے بجلی کا نظام درہم برہم کیا ہے، اس کی درستی کے لیے وہ وزیرِ توانائی سے رابطے میں رہیں گے۔

وزیرِ اعظم نے کہا کہ وفاق نے سندھ میں سیلاب کی تباہ کاریوں سے نمٹنے کے لیے 15 ارب روپے کی گرانٹ دی ہے

انہوں نے کہا کہ ہمیں ملک کے عوام کی خدمت کیلئے خود کو وقف کرنا ہوگا، خرم دستگیر کو سندھ میں قیام کرنے کی ہدایت کر دی، بجلی کے نظام میں خرابی دور کرنا اِن کی ذمہ داری ہوگی۔

ان کا کہنا تھا کہ سیلاب سے سندھ میں بہت تباہی مچی ہے اور بہت نقصان ہوا ہے، ہمت سے کام لینا ہوگا، مل کر صورتحال سے نمٹنا ہوگا۔

وزیرِ اعظم  نے کہا کہ آئی ایم ایف سےہماری میٹنگ ہے اور ایک جماعت سیاست کر رہی ہے، میں نےاپنی زندگی میں ایسی سیاست نہیں دیکھی۔

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ سیلاب متاثرین کے علاج کیلئے مراکز بنائے گئے ہیں، جنوبی سندھ میں سیلاب سے بہت نقصان ہوا ہے۔



Leave a Reply

Your email address will not be published.